15 مئی، 2013

چند خیالات بنگالیوں کے بارے



آج ایک لوکل عرب کولیگ سے گپ شپ  ھو رہی تھی تو  کہنے لگا کہ بنگالیوں کا امیج عربوں کی نظر میں کافی خراب ھے کہ یہ پرلے درجے کے جھوٹے اور چکر باز سمجھے جاتے ھیں۔  یہ لوگ ھر وہ  کام کرنے کی حامی بھر لیتے ھیں۔ جس کاان کو دور دور تک علم نہیں ھوتا۔ 

اس سال کار کا ایکسیڈنٹ ھوا تو مجھے میرے تمام عرب کولیگز نے ایک ہی نصیحت کی کہ کسی بنگالی گیرج میں نہ گھس جانا  گاڑی کی مرمت کروانے۔ بیڑا غرق کر کے سوری سوری کرتے پھریں گے بنگالی۔

یہاں اکثر جرائم کی خبروں میں بھی بنگالیوں کا ذکر خیر لازمی موجود ھوتا ھے۔ (خاص طور پر خواتین کے ساتھ بدتمیزی کرنے والے واقعات میں)۔ لیکن خیر سارے ایسے نہیں ہوتے۔

میں بعض اوقات حیرانی سے سوچتا ہوں کہ دبئی میں گزارے پچھلے چار پانچ  سال میں   مجھے ابھی تک کوئی خوشحال یا  مڈل کلاس بنگالی نظر نہیں آیا۔ جتنے بھی نظر آئے ، چھوٹی موٹے کام یا نوکری کرتے نظر آئے۔

1 تبصرہ: